Sunan An Nasai - The Book Of Wills 31 - Hadith #3674

Chapter The Book Of Wills
Book Sunan An Nasai Sunan An Nasai
Hadith No 3674
Baab کتاب: وصیت کے احکام و مسائل
ابوہریرہ رضی الله عنہ کہتے ہیں کہ   جب آیت: «وأنذر عشيرتك الأقربين» نازل ہوئی تو رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے قریش کو بلایا چنانچہ قریش سبھی لوگ اکٹھا ہو گئے، تو آپ نے عام و خاص سبھوں کو مخاطب کر کے فرمایا: ”اے بنی کعب بن لوئی! اے بنی مرہ بن کعب! اے بنی عبد شمس! اے بنی عبد مناف! اے بنی ہاشم اور اے بنی عبدالمطلب! تم سب اپنے آپ کو آگ سے بچا لو اور اے فاطمہ ( فاطمہ بنت محمد ) تم اپنے آپ کو آگ سے بچا لو کیونکہ میں اللہ کے عذاب کے سامنے تمہارے کچھ بھی کام نہیں آ سکتا سوائے اس کے کہ ہمارا تم سے رشتہ داری ہے جو میں ( دنیا میں ) اس کی تری سے تر رکھوں گا“ ۱؎۔
It was narrated that Abu Hurairah said:
When the following was revealed: 'And warn your tribe (O Muhammad) of near kindred,' the Messenger of Allah called the Quraish and they gathered, and he spoke in general and specific terms, then he said: 'O Banu Ka'b bin Lu'ayy! O Banu Murrah bin Ka'b! O Banu 'Abd Shams! O Banu 'Abd Manaf! O Banu Hisham! O Banu 'Abdul-Muttalib! Save yourselves from the Fire! O Fatimah! Save yourself from the Fire. I cannot avail you anything before Allah, but I will uphold the ties of kinship with you.
أَخْبَرَنَا إِسْحَاق بْنُ إِبْرَاهِيمَ، ‏‏‏‏‏‏قَالَ:‏‏‏‏ حَدَّثَنَا جَرِيرٌ، ‏‏‏‏‏‏عَنْ عَبْدِ الْمَلِكِ بْنِ عُمَيْرٍ، ‏‏‏‏‏‏عَنْ مُوسَى بْنِ طَلْحَةَ، ‏‏‏‏‏‏عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ، ‏‏‏‏‏‏قَالَ:‏‏‏‏ لَمَّا نَزَلَتْ:‏‏‏‏ وَأَنْذِرْ عَشِيرَتَكَ الأَقْرَبِينَ سورة الشعراء آية 214، ‏‏‏‏‏‏دَعَا رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ قُرَيْشًا، ‏‏‏‏‏‏فَاجْتَمَعُوا فَعَمَّ وَخَصَّ، ‏‏‏‏‏‏فَقَالَ:‏‏‏‏ يَا بَنِي كَعْبِ بْنِ لُؤَيٍّ، ‏‏‏‏‏‏يَا بَنِي مُرَّةَ بْنِ كَعْبٍ، ‏‏‏‏‏‏يَا بَنِي عَبْدِ شَمْسٍ، ‏‏‏‏‏‏وَيَا بَنِي عَبْدِ مَنَافٍ، ‏‏‏‏‏‏وَيَا بَنِي هَاشِمٍ، ‏‏‏‏‏‏وَيَا بَنِي عَبْدِ الْمُطَّلِبِ، ‏‏‏‏‏‏أَنْقِذُوا أَنْفُسَكُمْ مِنَ النَّارِ، ‏‏‏‏‏‏وَيَا فَاطِمَةُ، ‏‏‏‏‏‏أَنْقِذِي نَفْسَكِ مِنَ النَّارِ، ‏‏‏‏‏‏إِنِّي لَا أَمْلِكُ لَكُمْ مِنَ اللَّهِ شَيْئًا غَيْرَ أَنَّ لَكُمْ رَحِمًا، ‏‏‏‏‏‏سَأَبُلُّهَا بِبِلَالِهَا .
Reference : Sunan An Nasai 3674
In-book reference : Book 31, Hadith 33
USC-MSA web (English) reference
(deprecated numbering scheme)
: Vol. 5, Position 26 of Hadith 3674.
Sunan An Nasai
Hadith# 3674
أَخْبَرَنَا إِسْحَاق بْنُ إِبْرَاهِيمَ، ‏‏‏‏‏‏قَالَ:‏‏‏‏ حَدَّثَنَا جَرِيرٌ، ‏‏‏‏‏‏عَنْ عَبْدِ الْمَلِكِ بْنِ عُمَيْرٍ، ‏‏‏‏‏‏عَنْ مُوسَى بْنِ طَلْحَةَ، ‏‏‏‏‏‏عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ، ‏‏‏‏‏‏قَالَ:‏‏‏‏ لَمَّا نَزَلَتْ:‏‏‏‏ وَأَنْذِرْ عَشِيرَتَكَ الأَقْرَبِينَ سورة الشعراء آية 214، ‏‏‏‏‏‏دَعَا رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ قُرَيْشًا، ‏‏‏‏‏‏فَاجْتَمَعُوا فَعَمَّ وَخَصَّ، ‏‏‏‏‏‏فَقَالَ:‏‏‏‏ يَا بَنِي كَعْبِ بْنِ لُؤَيٍّ، ‏‏‏‏‏‏يَا بَنِي مُرَّةَ بْنِ كَعْبٍ، ‏‏‏‏‏‏يَا بَنِي عَبْدِ شَمْسٍ، ‏‏‏‏‏‏وَيَا بَنِي عَبْدِ مَنَافٍ، ‏‏‏‏‏‏وَيَا بَنِي هَاشِمٍ، ‏‏‏‏‏‏وَيَا بَنِي عَبْدِ الْمُطَّلِبِ، ‏‏‏‏‏‏أَنْقِذُوا أَنْفُسَكُمْ مِنَ النَّارِ، ‏‏‏‏‏‏وَيَا فَاطِمَةُ، ‏‏‏‏‏‏أَنْقِذِي نَفْسَكِ مِنَ النَّارِ، ‏‏‏‏‏‏إِنِّي لَا أَمْلِكُ لَكُمْ مِنَ اللَّهِ شَيْئًا غَيْرَ أَنَّ لَكُمْ رَحِمًا، ‏‏‏‏‏‏سَأَبُلُّهَا بِبِلَالِهَا .
ابوہریرہ رضی الله عنہ کہتے ہیں کہ   جب آیت: «وأنذر عشيرتك الأقربين» نازل ہوئی تو رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے قریش کو بلایا چنانچہ قریش سبھی لوگ اکٹھا ہو گئے، تو آپ نے عام و خاص سبھوں کو مخاطب کر کے فرمایا: ”اے بنی کعب بن لوئی! اے بنی مرہ بن کعب! اے بنی عبد شمس! اے بنی عبد مناف! اے بنی ہاشم اور اے بنی عبدالمطلب! تم سب اپنے آپ کو آگ سے بچا لو اور اے فاطمہ ( فاطمہ بنت محمد ) تم اپنے آپ کو آگ سے بچا لو کیونکہ میں اللہ کے عذاب کے سامنے تمہارے کچھ بھی کام نہیں آ سکتا سوائے اس کے کہ ہمارا تم سے رشتہ داری ہے جو میں ( دنیا میں ) اس کی تری سے تر رکھوں گا“ ۱؎۔
It was narrated that Abu Hurairah said: When the following was revealed: 'And warn your tribe (O Muhammad) of near kindred,' the Messenger of Allah called the Quraish and they gathered, and he spoke in general and specific terms, then he said: 'O Banu Ka'b bin Lu'ayy! O Banu Murrah bin Ka'b! O Banu 'Abd Shams! O Banu 'Abd Manaf! O Banu Hisham! O Banu 'Abdul-Muttalib! Save yourselves from the Fire! O Fatimah! Save yourself from the Fire. I cannot avail you anything before Allah, but I will uphold the ties of kinship with you.
Sunan An Nasai
Hadith# 3674
أَخْبَرَنَا إِسْحَاق بْنُ إِبْرَاهِيمَ، ‏‏‏‏‏‏قَالَ:‏‏‏‏ حَدَّثَنَا جَرِيرٌ، ‏‏‏‏‏‏عَنْ عَبْدِ الْمَلِكِ بْنِ عُمَيْرٍ، ‏‏‏‏‏‏عَنْ مُوسَى بْنِ طَلْحَةَ، ‏‏‏‏‏‏عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ، ‏‏‏‏‏‏قَالَ:‏‏‏‏ لَمَّا نَزَلَتْ:‏‏‏‏ وَأَنْذِرْ عَشِيرَتَكَ الأَقْرَبِينَ سورة الشعراء آية 214، ‏‏‏‏‏‏دَعَا رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ قُرَيْشًا، ‏‏‏‏‏‏فَاجْتَمَعُوا فَعَمَّ وَخَصَّ، ‏‏‏‏‏‏فَقَالَ:‏‏‏‏ يَا بَنِي كَعْبِ بْنِ لُؤَيٍّ، ‏‏‏‏‏‏يَا بَنِي مُرَّةَ بْنِ كَعْبٍ، ‏‏‏‏‏‏يَا بَنِي عَبْدِ شَمْسٍ، ‏‏‏‏‏‏وَيَا بَنِي عَبْدِ مَنَافٍ، ‏‏‏‏‏‏وَيَا بَنِي هَاشِمٍ، ‏‏‏‏‏‏وَيَا بَنِي عَبْدِ الْمُطَّلِبِ، ‏‏‏‏‏‏أَنْقِذُوا أَنْفُسَكُمْ مِنَ النَّارِ، ‏‏‏‏‏‏وَيَا فَاطِمَةُ، ‏‏‏‏‏‏أَنْقِذِي نَفْسَكِ مِنَ النَّارِ، ‏‏‏‏‏‏إِنِّي لَا أَمْلِكُ لَكُمْ مِنَ اللَّهِ شَيْئًا غَيْرَ أَنَّ لَكُمْ رَحِمًا، ‏‏‏‏‏‏سَأَبُلُّهَا بِبِلَالِهَا .
ابوہریرہ رضی الله عنہ کہتے ہیں کہ   جب آیت: «وأنذر عشيرتك الأقربين» نازل ہوئی تو رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے قریش کو بلایا چنانچہ قریش سبھی لوگ اکٹھا ہو گئے، تو آپ نے عام و خاص سبھوں کو مخاطب کر کے فرمایا: ”اے بنی کعب بن لوئی! اے بنی مرہ بن کعب! اے بنی عبد شمس! اے بنی عبد مناف! اے بنی ہاشم اور اے بنی عبدالمطلب! تم سب اپنے آپ کو آگ سے بچا لو اور اے فاطمہ ( فاطمہ بنت محمد ) تم اپنے آپ کو آگ سے بچا لو کیونکہ میں اللہ کے عذاب کے سامنے تمہارے کچھ بھی کام نہیں آ سکتا سوائے اس کے کہ ہمارا تم سے رشتہ داری ہے جو میں ( دنیا میں ) اس کی تری سے تر رکھوں گا“ ۱؎۔
It was narrated that Abu Hurairah said: When the following was revealed: 'And warn your tribe (O Muhammad) of near kindred,' the Messenger of Allah called the Quraish and they gathered, and he spoke in general and specific terms, then he said: 'O Banu Ka'b bin Lu'ayy! O Banu Murrah bin Ka'b! O Banu 'Abd Shams! O Banu 'Abd Manaf! O Banu Hisham! O Banu 'Abdul-Muttalib! Save yourselves from the Fire! O Fatimah! Save yourself from the Fire. I cannot avail you anything before Allah, but I will uphold the ties of kinship with you.

More Hadiths From: Sunan An Nasai - Chapter 31